Friday, June 26, 2015

کریڈٹ کارڈ پر آئس کریم خریدنا صحیح یا غلط

بٹ صاحب میرے دوست ہیں، کل رات دفتر سے فارغ ہو کر مجھے میٹرو سٹور سے کھجوریں خریدنی تھیں۔ بِل دے کر نکلنے لگا کہ بٹ صاحب سے ٹاکرا ہو گیا۔ کہنے لگے کہ آئس کریم کھائیں گے؟ میں نے کہا کہ نہیں جناب، شکریہ۔ لیکن میرے دوست نے ایک سے زیادہ مرتبہ اصرار کیا تو میں نے کہا کہ بہتر ہے جناب، کھا لیتے ہیں آئس کریم۔
بٹ صاحب نے فریزر کھولا اور دو عدد کارنیٹو نکال لیں۔ ہاں جی، یہ فوٹو والی کون آئسکریم۔

کلائمکس سین

 بِل دینے کی باری آئی۔
میرے دوست نے کچھ اور بھی سامان خرید رکھا تھا۔
باتیں کرتے کرتے موصوف نے کریڈٹ کارڈ بٹوے سے نکالا اور کیشیئر کے حوالے کر دیا۔
میں نہیں جانتا کہ میرے دوست کے معاشی معاملات اندرونی طور پر کیسے ہیں۔ ضروری نہیں کہ انہوں نے کارڈ پر ادھار شاپنگ کی ہو۔
البتہ ایک مفروضہ ذہن میں آیا کہ اگر اس بندے کے پاس پیسے نہیں ہیں اور یہ کریڈٹ کارڈ پر آئس کریم اور دیگر اضافی اشیائ خرید رہا ہے تو کیا یہ غلط نہیں کر رہا؟
ایسے شخص کے دوست کو کیا خاموشی سے مفت آئس کریم کھا کر اپنی راہ لینی چاہیئے یا اسے احتیاط کا مشورہ دینا چاہیئے؟ وہ کہتے ہیں نا کہ بیٹا آم کھائو، پیڑ مت گِنو۔

فساد کی جڑ

دراصل یہ سارا فتور مسٹر منی مسٹیش نامی بلاگر کا ہے۔ اس شخص کے گمراہ کن بلاگز پڑھ پڑھ کر مجھے کنجوسی کا بخار سا ہوا چاہتا ہے۔ یہ صاحب امریکی معاشرے کے حساب سے لکھتے ہیں۔ اور فرماتے ہیں کہ اگر آپ صرف دس سال سمجھداری سے خرچ کر لیں اور سلیقہ مندی کو اپنی عادت بنا لیں تو آپ چالیس سال کی عمر میں ریٹائر ہو سکتے ہیں اور باقی عمر بیٹھ کر کھا سکتے ہیں۔ ہمیشہ کے لئے گدھوں کی طرح کام کرنا کوئی فرض نہیں ہے۔

 البتہ میں پاکستانی معاشرے میں بھی ایسے لوگوں کو جانتا ہوں جنہوں نے لاکھوں روپے بینکوں سے ادھار لے رکھے ہیں۔ چند ماہ تک میں خود بینکوں کے قرضے تلے مرنے والا ہو رہا تھا۔ اب حالات بہتر ہیں، الحمدللہ۔

حاصل  بحث

کریڈٹ کارڈ، قسطوں پر گاڑی، قسطوں پر مکان، ریڈی کیش، بینک بڑی شفقت سے یہ سب آپ کی جیب میں ڈال دیتا ہے۔ بلاشبہ آپ چاہیں تو انکار کر سکتے ہیں لیکن بہت سارے لوگ انکار نہیں کر پاتے۔
اور پھر جب آنکھ کھلتی ہے تو پلوں کے نیچے سے بہت سا پانی گزر چُکا ہوتا ہے۔

money-credit-card

پوچھنے لائق سوال

بہادر قاری، یہاں تک آن پہنچے۔ اگر آپکے پاس کریڈٹ کارڈ اور دیگر بینکاری سہولتیں موجود ہیں تو کوئی بھی ادھار اٹھانے سے پہلے خود سے سوال پوچھیں کہ

کیا آپکو واقعی باون انچ کا سمارٹ ٹی وی چاہیئے؟
کیا  بڑی گاڑی آپکی ضرورت ہے بھی یا نہیں؟
کیا آئی فون سِکس کے بغیر آپکا دم گُھٹ جائیگا؟
کیا آپ اس کھانے یا شاپنگ کا بِل کریڈٹ کارڈ کے بجائے نقد دے سکتے ہیں؟
کیا آپکو قسطوں پر آج ہی لیپ ٹاپ لینا چاہیئے یا دو ماہ صبر کرنے سے بھی کام چل جائیگا؟


نوٹ: زیر بحث مسئلے سے قطع نظر میں اپنے دوست کی محبت کے لئے انکا شکر گزار ہوں۔

Friday, June 12, 2015

Suzuki Wagon R Test Drive

Suzuki Wagon-R Test Drive

گاڑی ورکشاپ سے واپس لینی تھی، سہ پہر کو سوزوکی ٹائون شپ موٹرز گیا۔ وہاں ایک سوزوکی ویگن آر پر نظر پڑی، اس
 پر بڑا بڑا لکھا تھا ٹیسٹ ڈرائیو می۔
یہاں انوائس وغیرہ کلیئر کروانا جوائے نامی صاحب کی ذمہ داری تھی۔ میں نے انہیں کہا کہ جناب میرے دو کام کریں، پہلا تو میری گاڑی کا بِل کلیئر کروائیں اور دوسرا ویگن آر کی ٹیسٹ ڈرائیو لے کر دیں۔ انہوں نے اثبات میں سر ہلا دیا۔

لائسنس کا مسئلہ

نوجوان سیلز مین ہاتھ میں ویگن آر کی چابی لئے میرے پاس آیا، سلام دعا کے بعد پوچھنے لگا کہ بھائی آپکے پاس ڈرائیونگ لائسنس ہے؟ میں نے کہا کہ یار اسوقت تو دفتر میں پڑا رہ گیا، اسکے بغیر کام نہیں چلے گا؟ جواب مِلا کہ نہیں جناب لائسنس ضروری ہے۔
 میں سمجھا شاید کمپنی کی ریکوائرمنٹ ہو گی۔ لیکن اتنی دیر میں نوجوان نے جوائے صاحب سے کہا کہ "پہلے علی بھائی نے دو مرتبہ اپنے شناختی کارڈ پر چالان کروایا ہے۔" مجھے سمجھ آ گئی کہ کیا چکر ہے۔
"کوئی مسئلہ نہیں یار، اس مرتبہ میں اپنے شناختی کارڈ پر چالان کروا لوں گا"
میں نے صورتحال کو سمجھتے ہوئے پیشکش کر دی۔ اس پر نوجوان مسکرا کر کہنے لگا کہ چلیں سر جیسے آپکی مرضی اور مجھے چابی تھما دی۔

100% discount on my socket and network programming course using C#

مہران اور ویگن آر میں فرق

مہران کی بریک بالکل چنگ چی رکشے جیسی ہے، پورے زور سے دبائو تو لگتی ہے۔ ویگن آر کی بریک تو بس اشارے سے ہی لگی جا رہی تھی ٹھک کر کے۔
پاور سٹیئرنگ کی وجہ سے گاڑی کا سٹیئرنگ انگلی کے اشارے پر گھومتا ہے۔
گیئر بالکل مکھن کی طرح نرم اور ملائم لگتے ہیں۔
اسکے علاوہ سائیڈ ویو مرر یعنی بغلی نظارے والا شیشہ بھی کافی بڑا ہے۔
گاڑی کا اے سی بھی بہترین ہے۔

مجھے ذاتی طور پر یہ گاڑی پسند آئی ہے۔ سوزوکی سوئفٹ بھی اچھی ہے لیکن اسکی قیمت بہت زیادہ ہے۔ جب کبھی مہران بیچی تو امید ہے کہ میں خود ویگن آر ہی خریدوں گا۔

Pak Urdu Installer

Pak Urdu Installer